پانچ اکتوبر کو مسیحی مہاجرین کے لیے بلائ جانے والی میٹینگ چند ہفتوں کے لیے موخر کر دی گئ۔

معزز مسیحی کمیونیٹی، جیسے کہ آپ جانتے ہیں کہ پانچ اکتوبر کو نیدرلینڈزکے شہر آمسٹلفین میں ایک خصوصی میٹینگ کا اہتمام کیا گیا تھا، جو کہ مسیحی پناہ گزین کے حوالے سے تھی۔ ہماری رپورٹ کے مطابق مہاجرین کے کیمپس میں مسیحی اپنے جواب کا انتظار کر رہے ہیں اور بہت سے ایسے ہیں جن کو ڈیپورٹ کرنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔ ہم نے پہلے بھی اس مسلئے کو نیدرلینڈز کی حکومت کے سامنے پیش کیا تھا اور اس کے مثبت نتائج سامنے آیے تھے۔ میں ہر اآس شخص کی قدر کرتا ہوں جو مشترکہ جدوجہد پر یقین رکھتا ہے۔ کیونکہ مشترکہ جدوجہد اتحاد اور یگانگت کی عکاسی کرتی ہے اور یہ طاقتور ہتھیار ہے۔ یہ کسی اکیلے شخص یا گروپ کا کام نہی۔ اور جو کوئ بھی اپنے غرور میں یہ سمجھتا ہے وہ احمقوں کی جنت میں رہتا ہے۔ ہم پہلے بھی پوری کمیونیٹی کو درخواست کرتے رہے ہیں کہ ان مسایئل میں سب مل کر کام کریں۔
1379674_386679291459289_843904516_n
اس میٹینگ کو موخر کرنے کی وجہ یہ ہے کہ ہماری پوری ٹیم اس وقت شہہداءپشاور کے غم میں برابر کی شریک ہے۔ میمورئل سروس کے علاوہ احتجاجی مظاہرے بھی کیے جارہے ہیں۔ اب ہم یوروپیئن پارلیمنٹ کے سامنے ایک زبردست مظاہرے کی تیاری کر رہے ہیں۔ جس میں ناروے، جرمنی، فرانس اور برطانیہ سے وفود کی آمد متوقع ہے۔ نیدرلینڈز اور بیلجئم کے غیور اور باہمت مسیحی اس کی تیاریوں میں مصروف ہیں۔ 28 اکتوبر کو ہم اپنی آواز یوروپیئن پارلیمنٹ کے اعوانوں تک پہنچاییں گے۔

اس مظاہرے کے انتظامی امور میں نیدرلینڈز اور بیلجیئم سے پاسٹر ندیم دین، لطیف بھٹی، ساجد بھٹی، سلویسٹر تائر بھٹی، عابد شکیل، سرفراز اعجاز، جان بھٹی، عمانیئل بھٹی ، اشرف بھٹی، پاسڑ جان اشرف، شاہد پرویز، پاسٹر علیشاہ، یقوب مسیح، اشکناز، شہزاد بھٹی، ویرن گرداری، پرویز مسیح اور واٹسن گل شامل ہیں۔ کمیونیٹی کا ہر فرد اس لسٹ میں اپنا نام شامل کر کے اس عظیم جدوجہد کا حصہ بن سکتا ہے۔ اس میں ناروے۔ برطانیہ اور فرانس کے وفود کا بھی شامل ہو رہے ہیں۔ مُکمل تفصیلات جلد آپ تک پہنچ جاییں گی۔

Advertisements