آج 12 فروری بروز بدھ کو بی بی سی کی ایک خبر پر نظر پڑھی۔ خوشی ہوئ کہ حیرت انگیز طور پر میں نے جو خبر یا یو کہہ لیجیے کہ جو تجزیہ میں نے ایک ہفتہ قبل اپنے ایک آرٹیکل میں گلوبل کرسچن وائس پر پوسٹ کیا تھا۔
یعنی بی بی سی جو آج 12 فروری کو کہہ رہا ہے وہ میں 5 فروری کو اپنے آرٹیکل میں کہہ چکُا ہوں۔ آپ ملاحظہ کر سکتے ہیں۔ اپنے اس آرٹیکل میں پاکستانی میڈیا کے کردار پر اپنے خدشات کا اظہار کیا تھا اور’مولانا عبدالعزیز اور طالبان کی شریعت کو بلاوجہ موضع بنا کر لوگوں کے دل و دماغ میں نقش کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ بی بی سی کی خبر کا عنوان ہے (’میڈیا طالبان کو سیاسی مرتبہ دے رہا ہے)‘

لینک ملاحظہ فرماییں،

کیا ایک اور لال مسجد کی طرز کا ڈرامہ ہوگا۔ کہ پہلے طالبان سے ڈرایا جایے گا اور پھر ان پر حملوں کی صورت میں عورتوں اور بچونکی لاشیں دکھا کر اس آپریشن کو ناکام بنایا جایے گا

https://globalchristianvoice.wordpress.com/2014/02/05/%da%a9%db%8c%d8%a7-%d8%a7%db%8c%da%a9-%d8%a7%d9%88%d8%b1-%d9%84%d8%a7%d9%84-%d9%85%d8%b3%d8%ac%d8%af-%da%a9%db%8c-%d8%b7%d8%b1%d8%b2-%da%a9%d8%a7-%da%88%d8%b1%d8%a7%d9%85%db%81-%db%81%d9%88%da%af/

Advertisements