واٹسن گل
نیدرلینڈز: 27 مارچ 2014
پاکستانی ڈچ کریسچن کمیونیٹی کے وفد اور ڈچ پارلیمنٹ ممبر جناب پیئٹر اومذخت کی ملاقات نہیایت کامیاب رہی۔ یہ ملاقات ڈچ پالیمنٹ میں ہالینڈ کی ایک بڑی سیاسی پارٹی سی، ڈی، اے کے چیمبر میں ہوئ۔ پاکستانی وفد میں شامل پاسٹر ندیم دین، جان بھٹی، کلیم سلیم، جیسی گل، ویرون گردھاری، بیلجیئم سے جناب لطیف بھٹی بھی موجود تھے اور راقم واٹسن گل بھی اس وفد کا حصہ تھے

meeting with Peter Omzigt 3،
میٹینگ میں تمام ممبرز نے اپنے اپنے طور پر پاکستانی مسیحی بہن بھائ تھائ لینڈ، سری لنکا اور ملیشیا میں بہت مشکل میں ہیں کے لیئے آواز بلند کی اور ڈچ پارلیمنٹ کی توجہ ہالینڈ میں موجود پاکستانی مسیحی پناہ گزین کی جانب بھی دلوائ۔ پاسٹر ندیم نے زور دیا کہ تھائ لینڈ، سری لنکا اور ملیشیا میں موجود ہمارے لوگوں کے لیئے ڈچ حکومت کو کُچھ کرنا چاہیئے۔ جناب لطیف بھٹی صاحب نے پاکستانی کی موجودہ صورتحال پر روشنی ڈالی اور جیسی گل نے بھی سوال اُٹھایا کہ اگر کوئ پناہ گزین کہتا ہے کہ میں کرسچن ہوں تو ڈچ حکومت کو اس سلسلے میں کیا ثبوت چائے کہ وہ مطمئن ہو سکے۔
جناب کلیم سلیم اور واٹسن گل نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستانی مسیحی پناہگزین کے لیئے آواز کو ہر فورم پر اُٹھایا جائے۔

meeting with Peter Omzigt 1
جناب پیٹر اوسخت نے بھی اپنے پاکستان کے ایک دورے کا زکر کیا اور بتایا کہ وہ جانتے ہیں کہ مسیحی پاکستان میں مشکلات کا شکار ہیں۔ اور اس کے ساتھ ہی ڈچ پارلیمنٹ ممبر نے مستقبل قریب میں ایک زبردست حکمت عملی پر کام کرنے پر زور دیا جسے ہم سب نے پسند کیا۔ (میٹینگ کے بعد وفد کے تمام ممبرز نے یہ فیصلہ کیا کہ فلاحال اس حکمت عملی کو راز میں رکھا جائے)۔
میٹنینگ کے اختتام پر جناب پاسٹر ندیم دین نے ڈچ پارلیمنٹ ممبر کو پٹیشن پیش کی۔ اور میٹینگ برخاست ہو گئ

meeting with Peter Omzigt 2meeting with Peter Omzigt 5

meeting with Peter Omzigt 6meeting with Peter Omzigt 7

Advertisements