27 جون کو برسلز میں ہونے والا مظاہرہ خُداوند یسوع مسیح کی مہربانی سے نہایت کامیاب رہا۔ مطاہرین کی تعداد توقع سے کم رہی مگر ایک مظاہرے میں مختلف مکاتب فکر کے لوگ مختلف سیاسی، سماجی اور مزہبی تنظیموں کے لوگ ایک جگہ اکھٹے ہوئے اور اتحاد اور یکجہتی کا جو مظاہرہ کیا گیا وہ یاد رکھا جائے گا۔ انتظامی امور میں شاید کچھ کمی رہ گئ مگر مجموعی طور پر ایک شاندار مظاہرہ تھا۔ ہماری دو پٹیشنز یوروپیئن پارلیمنٹ ممبر، بیلجئم پارلیمنٹ ممبر اور ناروے پارلیمنٹ ممبر کے علاوہ یوروپیئن یونین میں بھی جمح کروائ گئ

protest brussels 27 June poster thaliland,prwtest in Brussels 27 June

ہم نے کمیونٹی کو اکھٹا کرنے کے لئے ایک کوشش کی اور ایک مشترکہ پلیٹفارم فراہم کیا۔ اور ہم نے اپنی آواز ایک یا دو نہی بلکہ یورپ کے تین ممالک کے پارلیمنٹ ممبرز بشمول یوروپیئن پارلیمنٹ کے سامنے اٹھائ۔ اور ان کو کمیونٹی کے سامنے دو پٹیشنس پیش کی گئ جن میں سے ایک امتیازی قوانین اور دوسری سیاسی پناہ گزین جو تھائ لینڈ، ملیشیا اور سری لنکا سے متلعق تھی  اور پھر ہمارا ایک وفد جو کہ بیلجئم سے لطیف بھٹی، ناروے کی پارلیمنٹ کے ممبر مسٹر ہنس اولاو سیورسن،بیلجئم سے پاسٹر نجئم، ڈنمارک سے نواز سلامت (اے پی سی ایل) اٹلی سے سرور بھٹی، بیلجئم سے اشرف بھٹی، ناروے سے ظفر اقبال پر مشتمل تھا یوروپیئن پارلیمنٹ میں بھی یہ پٹیشنز پیش کر کے آیا۔

Protest in Brussels ,Gasper,Protest Brussels petition giving to Hans,10352092_736239136417196_3152710613466667021_nProtest in Brussels chami. geo tv 10418339_736238796417230_9188222208404490143_n10440878_736239763083800_6376979766187043857_n

مجھے نہی یاد کہ اس سے پہلے کسی بھی پاکستانی مظاہروں میں تین مختلف ملکوں کے پارلیمنٹ ممبز نے نہ صرف مظاہرے میں شرکت کی بلکہ اس طرح سے کمیونیٹی کے سامنے ان سے فریاد کی گئ ہو۔ یہ مظاہرہ تعداد کے لحاز سے بھلے ہی کم رہا مگر ایک جگہ پر برطانیہ، ڈنمارک، سویٹزرلینڈ، سپین، ناروے، اٹلی، فرانس، جرمنی، بیلجئم اور نیدرلینڈز کے مسیحوں کا اکھٹا ہونا جن کا تعلق مختلف سیاسی، سماجی، مزہبی حلقوں سے ہو اور مختلف افکار، نظریات اور فلسفے کے حامل لوگ جمح ہوئے اس کے لئے ہماری ٹیم کی کوشش کی داد نہ دینا زیادتی ہو گی۔ پھر یہ تمام لوگ اپنی جیب سے اپنے طعام اور قیام کے زمیدار رہے۔ کسی قسم کی سپانسر شپ قبول نہی کی۔ یہ مظاہرین اپنے اپنے گھروں سے ہزاروں میل کا سفر کر کے اتحاد اور یکجہتی کے اس قافلے میں شامل ہوئے یہ بھی قابل تحسین ہیں۔

10435125_736238063083970_2362548217661379736_n10468096_736241463083630_8772840408660529543_n10509762_736240479750395_8686273765930691050_n10452343_736239376417172_462609057988203753_n (2)10444721_736238126417297_3576180976837402064_n10487360_736239599750483_8812882832406985663_n10502002_736240959750347_4314171260911652129_n

ہاں اس پروٹسٹ کو ناکام بنانے کے لئے سازش کی گئ جس کی جانب میں نے پہلے بھی اشارہ کیا تھا۔ بیلجئم میں ایک افواہ پھیلائ گئ کہ آئ ایس آئ اس پروٹسٹ کو واچ کر رہی ہے اور جو اس میں شامل ہوگا اگر وہ پاکستان جائے گا تو پرابلم ہو گی۔ پروٹسٹ میں موجود چار مختلف دوستوں نے مجھ سے اس کے متعلق پوچھا، جس پر مجھے بہت حیرت ہوئ۔ اس پر مضید تفصیلات اور تحقیق کے بعد کچھ لکھونگا۔

10353370_656012564492083_4082072516930493740_o10431238_656017074491632_1821079890849940281_o10325268_736238269750616_781986414161435585_n10418181_736239616417148_5431110154203090019_n10443501_736241633083613_1303217635331478890_n10456015_736238146417295_4759623402630740090_n10303454_736241946416915_4950538198353540486_n10464046_736241849750258_4864174710247811176_n10464332_736240323083744_6480422416427127786_n10293582_656016747824998_762130767857874161_o1962062_656012997825373_6846216300526698626_o10514758_736242186416891_5579813928073554762_n10460711_736240186417091_8561624707060987143_n

Advertisements