برٹش پاکستانی کرسچن ایسوسی ایشن اور انٹرنیشنل کرسچن کونسل کی جانب سے لندن میں پاکستانی ہائ کمیشن کے سامنے مشترکہ احتجاج پرخراج تحسین کے مستحق ہیں۔۔ واٹسن سلیم گل،
560154_10152813111347002_3489765903846836387_n
ہفتے کے روز 25 اکتوبر کو برٹش پاکستانی کرسچن ایسوسی ایشن اور انٹرنیشنل کرسچن کونسل کی جانب سے لندن میں پاکستانی ہائ کمیشن کے سامنے مظاہرہ کیا گیا ۔اس مظاہرے کا اہتمام برٹش پاکستانی کرسچن ایسوسی ایشن اور انٹرنیشنل کرسچن کونسل کی جانب کیا گیا تھا جس میں حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا گیا کہ آسیہ بی بی کو رہا کیا جائے۔
10710840_10152813111822002_4617173095571444501_n
اس مظاہرے میں آئ سی سی کے چیرمین قمر شمس ایڈوکیٹ، بی پی سی اے کے چیئرمین ولسن چوہدری کے علاوہ ایسٹر داس، تسکین خان، سیمسن جاوید، نیئم واعظ، جان باسکو، مایئکل میسحی اور دیگر کمیونٹی راہنماؤں نے ایک پٹیشن ہائ کمیشن کے حوالے کی۔
535907_10152813096037002_9124765313507147805_n1016493_10152813111302002_9023962525898236128_n
جہاں یہ مسیحی لیڈرز اور کمیوںٹی خراج تحسین کے لائق ہے وہاں شرم کی بات بھی ہے کہ برطانیہ میں پاکستانی مسیحیوں کی تعداد دس سے بارہ ہزار ہے مگر اس مظاہرے میں 150 کا ہندسہ بھی مبالغہ آرائ ہے۔ بہت سے مزہبی، سیاسی اور سماجی لیڈرز جن کا تعلق برطانیہ سے ہے اس عظیم مقصد میں ساتھ کھڑے نظر نہی آرہے۔ جو کہ قابل مزمت ہے۔

Advertisements