منگت مسیح، پاسٹر سنی اقبال اور پاسٹر عمران نیدرلینڈ میں مسیحی پناہ گزین کے حقوق کے لئے ڈچ پارلیمنٹ کے سامنے ہونے والے مظاہرے کی قیادت کریں گے، واٹسن سلیم گل،
3055436_f520
بروز بدھ 3 دسمبر 2014 کو دوپہر دو بجے دی ہیگ (ڈین ہاگ) میں ڈچ پارلیمنٹ کے سامنے ایک مظاہرے کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ اس مظاہرے میں نیدرلینڈ کی حکومت سے مطالبہ کیا جائے گا کہ وہ پاکستانی مسیحی پناہ گزینوں کی اسالئم کی درخواستوں پر نظر ثانی کریں اور اور انسانی حقوق کے بین الاقوامی قوانین کے تناظر میں ان کی درخواستوں پر فیصلے کریں۔ پاکستان میں مسیحیوں کے ساتھ امتیازی سلوک برتا جاتا ہے۔ اب نیدرلینڈ میں بھی پاکستانی مسیحوں کے لئے دروازے بند کئے جارہے ہیں جو کہ انسانی حقوق کے بین الاقوامی چارٹر کے منافی ہے۔
پاکستانی مسیحی کمیونٹی اپنے مسیحی پناہ گزین بہن بھایوں کے شانہ بہ شانہ کھڑی ہے۔ تمام چرچز، سیاسی، سماجی اور مزہبی راہنما ان کے ساتھ ہیں۔ پاسٹر ندیم دین، پاسٹر کیمرون تھامس (بیلجیئم)، ایویجلسٹ مایئکل ولیئم، لطیف بھٹی (بیلجئم)، جان بھٹی، عابد شکیل، پرویز اقبال، فراز اعجاز، بوبی باب، واٹسن سلیم گل اور بہت سے کمیونٹی ممبرز اپنے بہن بھایوں کے ساتھ مصبت کی اس گھڑی میں ان کے ساتھ اپنی آواز بلند کریں گے۔
خصوصی طور پر نیدرلینڈ کی پاکستانی کرسچن کمیونٹی سے درخواست ہے کہ اپنے آپسی جھگڑوں کو پس پُشت ڈال کر اپنے پناہ گزین بہن بھایوں کے لئے یکجا ہوں اور ان کے لئے آواز کو دیگر آوازوں کے ساتھ ملا کر ایک طاقتور آواز بنایں۔
ایسا نہ ہو کہ ہم اپنے کرسمس کی تیاریوں میں اپنے ان بہن بھایوں کو بھول جایں۔ گزرے کل میں ہم ان کی جگہ تھے۔ ہمیں اپنے وقت کو یاد رکھنا ہے۔ اگر ہمارے یہ بہن بھائ مضبوط ہونگے تو ہماری کمیونٹی مضبوط ہوگی۔
(دیگر تفصیلات کے لئے اگلی رپورٹ کا انتظار کیجئے۔ )

Advertisements