خدا کا شکر ہے کہ آج ایک اور مسیحی پناہ گزین کو ڈی ٹینشن سنٹر سے کیمپ شفٹ کر دیا گیا۔ واٹسن سلیم گل،

یاد رہے کہ اس پناہ گزین کو 29 اپریل کو ڈی پورٹ کیا جانا تھا۔ اور میں نے 28 اپریل کو مظاہرے کے دن ہی علان کر دیا تھا کہ مزکورہ مسیحی پناہ گزین کے ڈی پورٹ کے احکامات منسوخ ہو چکے ہیں۔ خدا کا شکر ہے کہ آج مجھے اس کا فون آیا ہے کہ اسے کیمپ منتقل کیا جا رہا ہے۔ اس ڈی ٹینشن سینٹر میں چار پاکستانی مسیحی تھے۔ جن میں سے اب صرف ایک رہ گیا ہے اور خدا نے چاہا تو وہ بھی جلد رہا ہو جائے گا۔ میں اپنے تمام پاکستانی مسیحیوں کو ان کامیابیوں کی مبارکباد پیش کرتا ہوں جو اجتماہی جدوجہد کا حصہ رہے ہیں۔ اور کمیونٹی میں یک جہتی اور اتحاد کے فروغ کے لئے متحرک رہتے ہیں۔ اور ہمارا حالیہ مظاہرہ اس اتحاد کا مظہر تھا۔

Advertisements