یورپ اور برطانیہ کے پاکستانی مسیحی نمایندے تھائ لینڈ ، ملیشیا اور سری لنکا کے ہم وطن تارکین کی آواز بنیں گے، واٹسن سلیم گل،
download (1)
پاکستانی مسیحی تارکین وطن اس وقت تھائ لینڈ میں انتہائ کسمپرسی کی زندگی گزار رہے ہیں۔ دودھ پیتے بچے اور ضیحیف خواتین سمیت مسیحیوں کو جیلوں میں قید رکھا جا رہا ہے۔ ان کا قصور یہ ہے کہ وہ مسیحی ہیں اور دنیا میں ان کے لئے کوئ آواز بلند نہی ہوتی ۔ لوگ بیمار ہیں اور دوا مئیسر نہی ہے۔ انتہائ مخدوش حالات مین زندگی گزارنے پر مجبور ہمارے بہن بھائ ہماری جانب دیکھ رہے ہیں۔ میں یہ جانتا ہوں کہ یہ مسائل ہمارے لئے بہت بڑے ہیں ۔ اور ہم نہی جانتے کہ ہم کیا کر سکتے ہیں۔ کیونکہ ہمارے سیاسی اور مزہبی لیڈر خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں۔ ہاں ہم کوشش کر سکتے ہیں۔ نتیجہ ہمارے ہاتھ میں نہی ہے۔ اس لئے ہم چند مسیحی بھائیوں نے سوچا ہے کہ ہمیں سر جوڑ کر بیٹھنا چاہئے۔ ہم ان مسیحیوں سے درخواست کرتے ہیں جن کا تعلق خاص طور پر یورپ اور برطانیہ سے ہے۔ جیسے آپ سوشل میڈیا پر تھائ لینڈ کے مسیحوں کے لئے متحرک نظر آتے ہیں اسی طرح عملی طور پر بھی متحد ہو کر اپنی مسیحی محبت کا ثبوت دیں ۔
ہم بروز جمعہ 18 سپتمبر کو سکائیپ پر ایک میٹینگ بلا رہے ہیں ۔ جس میں ہالینڈ، اٹلی ، سویڈن ، بیلجیئم ، اسپین ، فرانس اور برطانیہ کے مسیحی نمایندوں نے شرکت کر کے اس حوالے سے ٹھوس اقدامات اٹھانے کی یقین دہانی کروائ ہے۔
آپ سب سے درخواست ہے کہ اس میٹینگ کی کامیابی کے لئے دعا کریں۔