فیصل آباد میں دو سالہ آیان مسیح کو شہید ، سمسون مسیح اور اسحاق مسیح کو شدید زخمی کر دیا گیا،
Global Christian Voice.png2
گلوبل کرسچن وائس معروف سماجی شخصیت اور ایڈوکیٹ عنیقہ ماریہ کے شکرگزار ہیں کہ وہ ہمیں پاکستانی مسیحیوں کے حالات سے باخبر رکھتیں ہیں۔
فیصل آباد کے قصبے ناظم آباد کا لونی کے رہائیشی سمسون مسیح جو کہ گھروں پر رنگ کا کام کرتا تھا۔ اس نے ایک مسلمان حاجی رشید کے گھر پر رنگ کرنے کا ٹھیکہ تیس ہزار روپئے میں لیا۔ رنگ تقریبا مکمل ہو گیا تھا مگر حاجی رشید پیسے دینے سے گریز کر رہا تھا۔ اچانک سمسون مسیح کا باپ اسحاق مسیح چلتے ہوئے گر پڑا جس سے اس کا بازو ٹوٹ گیا۔ اس کے گھر والوں نے سمسون کو اطلاح دی ۔ سمسون نے حاجی رشید سے اپنے پیسے مانگے تو حاجی رشید نے بڑی مشکل سے صرف پینتیس سو روپئے دیے ۔ سمسون مسیح اپنے باپ کے علاج میں مصروفیت کے باعث اس کا کام مکمل نہی کر سکا جس پر حاجی رشید غضب ناک ہو کر اس کے گھر آیا اور شرمناک قسم کی گالی گلوچ کرنے لگا جس پر سمسون اور اس کے والد اسحاق نے اسے منع کیا کی گھر پر خواتین ہیں گالی گلوچ مت کرو ۔ یہ سن کر حاجی رشید وہاں سے چلا گیا اور تھوڑی دیر بعد اپنے بیٹے بشارت اور اس کے دوست یاسر کے ساتھ اسلحے کے ساتھ حملہ کر دیا۔ دادا اور پوتا صحن میں کھیل رہے تھے۔ اسحاق مسیح اور سمسون مسیح گولیاں لگنے سے شدید زخمی ہو گئے جبکہ دو سالہ آیان مسیح سر میں گولی لگنے سے شہید ہو گیا۔