ایک اور پاکستانی مسیحی شہزاد مسیح گستاخ رسول کے قانون کے پنجے میں آ گیا۔ واٹسن سلیم گل،

images

گجرات کے قصبے ڈینگہ میں چند دن قبل شہزاد مسیح پر صدر تھانہ ڈینگہ میں  دفعہ 295 –سی کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا۔ علاقے کے مزہبی راہنما غازی ثاقب شکیل جلالی  نے شہزاد مسیح پر الزام لگایا کہ شہزاد نے بہت سے مسلمانوں کے درمیان رسول عربی کے خلاف گندی زبان استمال کی ہے جس کی وجہ سے اس پر مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ غازی شکیل کا کہنا ہے کہ جب اس سے پوچھا گیا تو اس نے اپنے جرم کا اعتراف کیا۔غازی صاحب نے کہا کہ اگر قانون نے اسے سزا نہ دی تو ہم اسے سزائے موت دیں گے۔ انہوں نے مضید کہا کہ 16 جولائ کو ختم نبوعت کی کانفرنس میں جو کھاریاں میں منقد ہو رہی ہے اس میں ہم حکومت سے مطالبہ کریں گے کہ شہزاد مسیح کو سزائے موت دی جائے۔ شہزاد مسیح کے خلاف ایف آئ آر راجہ ندیم  اور اشتیاق کی مدیت میں درج کروائ گی ہے۔ ایس ایچ او شہباز احمد نے ہجوم کو یقین دلایا ہے کہ شہزاد مسیح کو نشان عبرت بنا دیا جائے گا۔ یاد رکھیں کہ علاقے کے مسیحیوں میں خوف و ہراس پایا جاتا ہے۔

Advertisements