تھائ لینڈ میں پاکستانی مسیحیوں کی حالت قابل رحم ہے اور ان کو  یورپ کی کمیونٹی کے توجہ کی شدید ضرورت ہے پاسٹر عمران گل،

IMG-20170825-WA0018IMG-20170825-WA0005

رپورٹ واٹسن سلیم گل) حال ہی میں پاسٹر عمران گل نے تھائ لینڈ کا دورہ کیا اور وہاں پر پاکستانی مسیحی پناہ گزینوں کی حالت زار دیکھ کر اپنے شدید تحفظات کا اظہار کیا انہوں نے بجائے ہوٹل میں رہنے کے اپنا وقت ان پناہ گزینوں کے درمیان گزارا اور ان کے حالات کے حوالے سے اپنے شدید دکھ اور رنج کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ وہاں لوگ انتہائ مخدوش حالات میں رہنے پر مجبور ہیں۔ بہت سے خاندان اپنے کم سن بچوں سمیت جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہیں۔ اور جیل میں بھی اگر ایک سیل میں پچاس لوگوں کی گنجائیش ہے تو وہاں تین سو لوگ ٹھوس دیئے گئے ہیں۔ جس سے ان میں جلد کی اور دیگر بیماریوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔ لوگ پریشان رہتے ہیں کہ کہیں وہ بیمار نہ ہو جائیں کیوں ان کے پاس کھانے کو کچھ نہی ہے تو دوا کہاں سے خریدیں گے۔ کئ لوگ خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہو چکے ہیں مگر کوئ علاج دستیاب نہی ہے۔ پاسٹر عمران نے بہت سے خاندانوں کی اپنے طور پر مدد بھی کی ہے اور تنہا ان کے لئے یہ ممکن نہی ہے۔ مگرمیں ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

IMG-20170825-WA0013IMG-20170825-WA0007

(میں اعتراف کرتا ہوں کے پاسٹر عمران نے جیسے مجھے حالات بتائے ہیں مجھے وہ لفظ ہی نہی مل رہے ہیں کہ میں تھائ لینڈ میں پاکستانی مسیحیوں کے حالات کی تصویر پیش کر سکوں۔ یہ مختصر رپورٹ ہے تفصیلی رپورٹ ان سے ملاقات کے بعد جلد آپ کے سامنے رکھونگا)۔

IMG-20170825-WA0016IMG-20170825-WA0014

ایک بات جس کی میں زمہ داری لیتا ہوں کہ لعنت ہے ہمارے ان نمایندوں پر جو پاکستان کی پارلیمنٹ میں مختلف سیاسی جماعتوں کا آلہ کار بنے ہوئے ہیں مگر ان کے پاس ہمارے تھائ لینڈ کی دوزخ میں پھنسے ہوئے بہن بھائیوں کی مشکلات کا کوئ حل نہی ہے۔ میں یورپ کے لیڈرز سے بھی درخواست کرتا ہوں کہ اگر آپ تنہا یا آپ کی سیاسی یا سماجی تنظیم تنہا،،، کسی کا باپ بھی تنہا اس عزاب سے ہمارے لوگوں کو نہی نکال سکتا۔ خدارا اپنے تکبر اور گھمنڈ کو پس پُشت ڈال کر متحد ہو کر اس مسلئے کو حل کرنے کے لئے سنجیدہ ہوں۔